***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > نماز کا بیان > اقامت کے مسائل

Share |
سرخی : f 759    اقامت کے بعد تاخیر ہوجائےتو کیا حکم ہے؟
مقام : انڈیا,
نام : حافظ عارف الدین
سوال:    

ہمارے محلہ کی مسجد میں نماز کیلئے اقامت کے وقت اچانک مائیک خراب ہوگیا ، لوگوں کی تعداد زیادہ ہونے کی وجہ سے مائیک کا انتظام بھی ضروری تھا ۔ اقامت ہونے کے کچھ دیر بعد مائیک درست ہوا اور نماز ادا کی گئی ۔ سوال یہ ہے کہ کیا اقامت کے بعد اتنی دیر ٹہرنا درست ہے یا دیر ہونے کی وجہ دوبارہ اقامت کہنا چاہئے ؟


............................................................................
جواب:    

اذان کے ذریعہ نماز باجماعت کا مجموعی اعلان کرنے کے بعد جب اقامت کہی جاتی ہے تو اس سے مسجد میں موجود مصلیوں کو یہ بتلانا مقصود ہوتا ہے کہ جماعت کھڑی ہوچکی ہے ، لہذا اقامت اور جماعت کے آغاز میں طویل فصل آئے اور آغاز نماز میں تاخیر ہوجائے تو اقامت باطل ہوجاتی ہے ۔ اس لئے دوبارہ اقامت کہہ لیں۔ اور اگر معمولی سا وقفہ ہوتو اقامت کو دُہرانے کی ضرورت نہیں ، طویل فصل اور معمولی وقفہ کے درمیان فرق کو واضح کرتے ہوئے علامہ ابن عابدین شامی نقشبندی رحمۃ اللہ علیہ رقمطراز ہیں: لِأَنَّ تَكْرَارَهَا غَيْرُ مَشْرُوعٍ إذَا لَمْ يَقْطَعْهَا قَاطِعٌ مِنْ كَلَامٍ كَثِيرٍ أَوْ عَمَلٍ كَثِيرٍ مِمَّا يَقْطَعُ الْمَجْلِسَ فِي سَجْدَةِ التِّلَاوَةِ . ترجمہ: اقامت کو دُہرانا اس وقت درست نہیں جب اذان و اقامت کے درمیان طویل گفتگو یا ایسا طویل عمل حائل نہ ہو جس سے سجدۂ تلاوت کیلئے مجلس بدل جاتی ہے ۔(رد المحتار ، کتاب الصلاة ، باب الاذان ، فائدة التسلیم بعد الاذان ) آپ کی مسجد میں نماز جمعہ کے موقع پر جب مائیک خراب ہوا تو اقامت کے بعد نماز کا آغاز کرنے میں کتنی تاخیر ہوئی ؟ اگر معمولی سا وقفہ ہوا تھا تو اقامت دُہرانے کی ضرورت نہیں اور اگر طویل فصل ہوئی ہو تو دوبارہ اقامت کہنا چاہئے ۔ واللہ اعلم بالصواب ۔ سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com