AR 507 : حضرت امام ربانی رحمۃ اللہ علیہ کی عظمت اور مقبولیت

حضرت امام ربانی رحمۃ اللہ علیہ کی عظمت اور مقبولیت

حضرت امام ربانی مجدد الف ثانی شیخ احمد فاروقی سرہندی رحمۃ اللہ علیہ کا نسب مبارک خلیفہ دوم حضرت سیدنا فاروق اعظم رضی اللہ عنہ سے جاملتا ہے۔

آپ کے فیض سے ایک عالم مستفید ہورہا ہے،آپ مجدد الف ثانی بھی ہیں اور قیوم زمانی بھی،صاحب اشارات ومعانی بھی ہیں اور کاشف رموز سبع مثانی بھی۔

آپ کے سلسلۂ عالیہ میں علماء، محدثین، فقہاء اور اولیاء ہوئے ہیں:

فن تفسیر میں علامہ شہاب الدین محمود حسینی آلوسی رحمۃ اللہ علیہ ،صاحب تفسیر روح المعانی

علامہ قاضی محمد ثناء اللہ پانی پتی رحمۃ اللہ علیہ ‘صاحب تفسیر مظہری

علم حدیث میں‘حضرت محدث دکن ابو الحسنات سید عبد اللہ شاہ نقشبندی مجددی قادری رحمۃ اللہ علیہ، صاحب زجاجۃ المصابیح

علم فقہ میں ‘علامہ علاء الدین ابن عابدین شامی رحمۃ اللہ علیہ‘صاحب رد المحتار

نمایاں مقام رکھتے ہیں۔

عقیدہ کی تصحیح کے اعتبار سے آپ کی بڑی خدمات ہیں،ہر مکتب فکر کے افراد کے پاس آپ کی ذات مسلمہ حیثیت رکھتی ہے،آپ کی ذات سب کے لئے نقطۂ اتحاد ہے۔

حضرت امام ربانی رحمۃ اللہ علیہ کی تعلیمات میں ہے کہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم اللہ تعالی کے حبیب ہیں،آپ کی اتباع کرنے والے خواہ ان کی حیثیت کچھ بھی ہوآپ کی اتباع کی برکت سے وہ اللہ تعالی کے محبوب ہوجاتے ہیں۔ آپ  صلی اللہ علیہ آلہ وسلم محب بھی ہیں اور محبوب بھی،آپ کی مُحبِّیت ومحبوبیت آپ کے مبارک نام ہی سے ظاہر ہورہی ہے،اسم مبارک’’محمد‘‘میں دو’’میم‘‘ہیں،ایک ’’میم‘‘محبیت کا ہے اور دوسرامحبوبیت کا ہے۔

مولانا حافظ سید احمد غوری نقشبندی صاحب استاذ جامعہ نظامیہ نے کہا کہ حضرت امام ربانی رحمۃ اللہ علیہ علم ومعرفت کے ابرکرم بن کر برسے جس سے عرب وعجم سب سیراب ہوئے ہیں۔

حضرت مجدد الف ثانی رحمۃ اللہ علیہ کی تشریف آوری سے پانچ سو سال قبل حضرت غوث اعظم رحمۃ اللہ علیہ نے بشارت دی تھی کہ جب تشریف لائیں گے تو ہر طرف آپ کی عظمت کا ڈنکا بجے گا،چار سوآپ کے نور کے اجالے ہوں گے۔

از:ضياء ملت حضرت مولانا مفتی حافظ سید ضیاء الدین نقشبندی مجددی قادری دامت برکاتہم العالیہ

شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ وبانی ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر




submit

  AR: 515   
زجاجۃ المصابیح حنفی دلائل کا عظیم حدیثی انسائکلوپیڈیا
..........................................
  AR: 514   
قرآن کریم کے ہم پر حقوق
..........................................
  AR: 513   
استغفار تمام پریشانیوں کا حل
..........................................
  AR: 512   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
  AR: 511   
تحفظ شریعت ملت کی اولین ذمہ داری
..........................................
  AR: 510   
اسلام حقوق انسانی کامحافظ
..........................................
  AR: 509   
تعلیمات حضرت غوث اعظم رحمۃ اللہ علیہ
..........................................
  AR: 508   
حضرت غوث اعظم رحمۃ اللہ علیہ عظمت و جلالت
..........................................
  AR: 507   
حضرت امام ربانی رحمۃ اللہ علیہ کی عظمت اور مقبولیت
..........................................
  AR: 506   
قرآن کریم تمام علوم کا سرچشمہ
..........................................
  AR: 505   
امام حسین رشدوہدایت کے مینار اور حق صداقت کے معیار
..........................................
  AR: 504   
امام عالی مقام حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کی عظمت و استقامت
..........................................
  AR: 503   
واقعۂ شہادت کا پُرسوز بیان
..........................................
  AR: 502   
راہ خدا میں خرچ کرنے کی فضيلت
..........................................
  AR: 501   
لیلۃ الجائزۃ (انعام والی رات)
..........................................
  AR: 500   
اعتکاف احکام ومسائل
..........................................
  AR: 499   
تذکرہ ام المؤمنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہا
..........................................
  AR: 498   
ماہ رمضان المبارک کی فضیلت وعظمت پرمشتمل پچیس 25 احادیث شریفہ
..........................................
  AR: 497   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
  AR: 496   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
Copyright 2008 - Ziaislamic.com All Rights reserved